Abdul Hakim, 58180, Punjab, PK

Tu Dost Kisi Ka Bhi Sitamgar Na Hua Tha – Mirza Ghalib

Har Taan Hai Deepuck!

Tu Dost Kisi Ka Bhi Sitamgar Na Hua Tha – Mirza Ghalib


تو دوست کسی کا بھی ستمگر نہ ہوا تھا

مرزا اسد اللہ خاں غالبؔ

مرزا غالبؔ کی غزل کی بلند خوانی۔

آواز: راحیلؔ فاروق

پیشکش: دیپک میڈیا

Tu Dost Kisi Ka Bhi Sitamgar Na Hua Tha(Audio)

Mirza Asad Ullah Khan Ghalib

Ghazal of Mirza Asadullah Khan Ghalib

Oral Interpretation: Raheel Farooq

Production: Deepuck Media

Deepuck Media produces Urdu poetry audios with a vision to promote the legendary tradition of Urdu literature. Classic recordings, full audios, absolutely free!

غزل

تو دوست کسی کا بھی ستمگر نہ ہوا تھا
اوروں پہ ہے وہ ظلم کہ مجھ پر نہ ہوا تھا

چھوڑا مہِ نخشب کی طرح دستِ قضا نے
خورشید ہنوز اس کے برابر نہ ہوا تھا

توفیق بہ اندازۂِ ہمت ہے ازل سے
آنکھوں میں ہے وہ قطرہ کہ گوہر نہ ہوا تھا

جب تک کہ نہ دیکھا تھا قدِ یار کا عالم
میں معتقدِ فتنۂ محشر نہ ہوا تھا

میں سادہ دل آزردگئِِ یار سے خوش ہوں
یعنی سبقِ شوقِ مکرر نہ ہوا تھا

دریائے معاصی تنک آبی سے ہوا خشک
میرا سرِ دامن بھی ابھی تر نہ ہوا تھا

جاری تھی اسدؔ داغِ جگر سے مری تحصیل
آ تشکدہ جاگیرِ سمندر نہ ہوا تھا

 

%d bloggers like this: